178

غلطی سے ایل او سی کراس کرنے والوں بچوں کی تصاویر جاری کر دی گئی

عباس پور کے سرحدی گاؤں سے تعلق رکھنے والے تین بچے جو غلطی سے ایل او سی پار کر گئے تھے مقبوضہ کشمیر میں فورسز کی زیر حراست ہیں۔ ابھی کچھ دیر قبل بھارتی مقبوضہ کشمیر ضلع پونچھ کے ڈپنی کمشنر نے مذکورہ بچوں کی تصویریں شیئر کی ہیں۔
اس واقع کے حوالے سے جو مزید تفصیلات سامنے آئی ہیں ان کے مطابق چار بچے تروٹی نالہ رنگڑ سے مچھلیوں کا شکار کرتے ہوئے غلطی سے ایل او سی کراس کر گئے۔ اسی دوران بھارتی فوج نے نالے کے اندر ہی گھیراؤ کر کے تین بچوں ارباب رحیم عمر 12 سال اور عمیر رحیم عمر 11 سال ولد عبدالر حیم اور دانیال ولد ملک نیاز عمر 17 سال ہے کو پکڑی ہوئی مچھلیوں کے تھیلے سمیت گرفتارکرلیا۔ جبکہ چوتھا بچہ دانیال کا کزن تھا نے پانی میں چھلانگ لگا کر دوسرے کنارے سے بھاگ نکلنے میں کامیاب ہو گیا وہ بھی زخمی ہے شائد اسے بھی بھارتی آرمی نے ڈنڈوں سے مارا ہے۔
گرفتار دو حقیقی بھائیوں کا تعلق تروٹی گاؤں سے ہے جبکہ تیسرے گرفتار بچے کا تعلق پلنگی حویلی کہوٹہ سے ہے وہ اپنے ننیہال لاسری منگ گاؤں اپنے کزن جو بھاگ نکلنے میں کامیاب ہو گیا ہے کے ساتھ آیا ہوا تھا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں